ادارے کا تعارف

انڈس موٹر کمپنی لمیٹڈ (آئی ایم سی) 1989 ء میں قائم ہوئی جوہاؤس آف حبیب پاکستان ،ٹویوٹا موٹر کارپوریشن اور ٹویوٹا سوشو کارپوریشن جاپان کی مشترکہ سرمایہ کاری ہے۔ کمپنی پاکستان میں ٹویوٹا برانڈ کی گاڑیاں تیار کرتی ہے۔اس کی اہم مصنوعات میں پسینجر کاروں کی کیٹیگری میں ’’کرولا‘‘ کی مختلف اقسام سمیت لائٹ کمرشل وہیکلز(LCV) کی کیٹیگری میں ‘Hilux’ اورSUV کی کیٹیگری میں ‘Fortuner’ شامل ہیں۔کمپنی کا 105 ایکڑ پر مبنی مینوفیکچرنگ پلانٹ اور دفتر کراچی کے بن قاسم کے علاقے میں واقع ہے ، جب کہ اس کے ملک بھر میں قائم 45 خود مختار 3S ڈیلر شپ کے ایک مضبوط نیٹ ورک کے ذریعے صارفین کو گاڑیوں کی ترسیل دی جاتی ہے۔

اپنے آغاز سے لے کر اب تک یعنی 27 برسوں کی تاریخ میں ، آئی ایم سی نے 750,000 سے زائد CKD گاڑیاں بنائی ہیں۔کمپنی کی پیداواری صلاحیت 1993 ء میں 20 گاڑیاں روزانہ تھی، جو کہ فی الوقت 240 گاڑیاں روزانہ تک پہنچ چکی ہے۔جو کہ کارکنان کے پیداواری صلاحیتوں میں اضافے اور”Toyota way” کے پیداواری نظریئے کے اختیار کرنے کی وجہ سے ممکن ہوا۔

گزشتہ برسوں میں ، آئی ایم سی نے اپنی پیداواری صلاحیت میں اضافے اور صارفین کے لئے نئی مصنوعات کی ضروریات کو پورا کرنے کے لئے بڑے پیمانے پر سرمایہ کاری کی ہے۔ آج کرولا پاکستان میں سب سے زیادہ فروخت ہونے والا گاڑیوں کا ماڈل ہے۔کرولا کی فروخت کے لحاظ سے، ٹویوٹا نہ صرف پاکستان بلکہ ایشا مارکیٹ میں بھی نمبر 1 کمپنی ہے۔

کمپنی نے 2,800 سے زائد ٹیم کے ارکان اور منیجمنٹ کی ٹریننگ کرنے میں بھر پوردلچسپی لی ہے تاکہ گاڑیوں کے معیار میں مسلسل بہتری کے لئے تسلسل برقرار رہے اور اس طرح اعلیٰ کارکردگی کا مظاہرہ کرنے والی ٹیموں کی تخلیقی صلاحیتوں میں اضافے کو بہت سراہا جاتا ہے۔

کمپنی کی بنیادی اقدار ، اخلاقیات اور تحفظ کے اعلیٰ معیار کی پیروی کرنے کے لئے اور لوگوں کی عزت کرنے پر ملازمین کی حوصلہ افزائی کرتی ہیں۔TMC کے ہر دو سالہ سروے سے ملازمتوں میں کام کے ماحول اور ملازم کے اطمینان کی سطح پر آئی ایم سی کی شرح کا پتہ چلتا ہے۔

کمپنی نے مقامی آٹو انڈسٹری کی پوری Value Chain کی ترقی میں اہم کردار اد ا کیا ہے، اور فخریہ طور پر غربت میں کمی لانے کے لئے مقامی طور پر صنعت کاری کو فروغ دیا ہے۔ اس کے نتیجے میں ہزاروں افراد کو براہِ راست رو زگار کے مواقع ملے اور ٹیکنالوجی کی منتقلی سے پارٹس کے فراہم کنندگان میں سے46 وینڈرز کو فوائد حاصل ہوئے۔ آئی ایم سی حکومتِ پاکستان کے خزانے میں ٹیکس دینے والا صفِ اوّل کااہم ادارہ ہے۔